کنواری سالی کی سیل کھولتے ہوئے بیوی نے دیکھ لیا ۔ –

ہم ایک بینچ پر بیٹھ کر باتیں کرنے لگے میں اب دھیرے دھیرے ا سکو سیکسی باتوں میں لگا رہا تھا تاکہ اس کو سیکس پہ آمادہ کع سکوں اور وہ بھی دلچسپی لینے لگی تھی اچانک میں نے اس کا ہاتھ پکڑ کر اپنی گود میں رکھ لیا شگفتہ کی تو جیسے سانس رک گی تھی اُس کا چہرہ لال سرخ ہو گیا میں نے ہاتھ چھوڑ کر کہا آو واک کرتے ہیں ہم ایک طرف چلنے لگے چلتے چلتے میں نے پھر ہاتھ پکڑ لےا اب اس نے خود پر کنٹرول رکھا

اور چلتی رہی چلتے چلتے میں اُسے ایک چھوٹے سے پل پرلے آیا جس کے دونوں طرف اونچی پتھروں کی دیوار تھی کہ گزرنے والوں کو ارد گرد کے لوگ نہیں دیکھ سکتے تھے جب ہم پل کے بالکل درمیان پہنچ گے تو میں نے کہا شگفتہ رکو وہ رک کر مجھے دیکھنے لگی میں نے اُس کےدونوں بازو پکڑ کر اسے دیوار سے لگا دیا

اُس کی سانس جیسے اکھڑ گی چہرہ شرم سے لال میں بولاشگفتہ
جواب ملاہوںںںںںں میں نے کہا لو یو جانوہ اور سرخ ہو گی میں نے فوراََ اس کے سیکسی ہونٹوں پر کس کر دی اف ف ف ف ف ف کیا رس بھرے ہوتٹ تھے ظاہم کے میرا لن تو اچھلنے لگا اور اس نے جذبات سے مجھے پکارا شان ن ن ن ن میں نے کہا آنکیں بند کرو شگفتہ نے حکم پر عمل کیا تو میں نے اب زیادہ زور سے کسنگ کیاب تو میرا ایک ہاتھ اُس کے دائیں جانب کے بڑے سیکسی ممے پر آگیا تھا اور وہ مچل رہی تھی

پھر ہم دونوں کا موڈ سیکسی چدائی پہ بن گیا میں اس کو ایک ماڈرن اور با اثر پولیس افسر کے ریسٹورنٹ میں لے گیا جو بظاہر صرف ریسٹورنٹ تھا لیکن خاص مستقل گاہک اور ایلیٹ کلاس کے لوگوں کو علم تھا کہ یہاں کپل مست کرنے آتے ہیں اور پولیس ریڈ نہیں کرتی سو میں اس سیکسی کزن کو وہاں لیکر روم میں پہنچ چکا تھا میری سیکسی کنواری کزن ڈری ڈری تھی لیکن میں نے ا سکو ہا حوصلہ رکھو کچھ نہیں ہوتا

ہم نے روم بک کرایا اور جاتے ہی میں نے سارے کپڑے اتار لیئے تھے اس کے سارے کپڑے میں نے ہی اتراے تھے سیکسی بدن چکان جوان سامنے تھا میرا لن فل ٹائٹ اور کنواری چوت میں گھسنے کے لیئےبے قرار تھا میں نے اس کو زبردست کسنگ اسٹارٹ کر دی تھی اور اب میرا لن اس کی سیکسی کنواری شیو چوت کے عین اوپر تھا تھوڑی سے چوت گیلی ہو چکی تھی بس میں نے ایک دم سے جھٹکا دیا اور آدھا لن کنواری چوت کی سیل توڑ کے اندر گھس گیا
اس کی چیخ نکلی ہائے مر گئی

اوئی ماں میں نے جلدی سے اس کے منہ پہ ہاتھ رکھا کہیں کوئی اس کی چیخ نا سن لے پھر یاد آیا اس ہوٹل کے سپیشل کمرے ساونڈ پروف خاص اس چدائی کی خاطر بنے ہوئے ہیں میں نے ہاتھ ہٹا لیا اور درد بھری چیخوں کے ساتھ پیلتا رہا پیلتا رہا جب تکھ گئے تو دیکھا بستر کی چادر خون سے بھری ہوئی تھی اور میرا لن اور بھی پھول چکا تھا میرے لن نے ایک اور کنواری چوت کی قربانی بلیدان قبول کی تھی