رات کے 2 بجے نوجوان لڑکی سڑک کنارے شدید زخمی حالت میں مل گئی، ہسپتال جاتے ہی دم توڑ گئی

امریکا میں گزشتہ روز ایک نوعمر لڑکی کو اس کے اپنے ہی سفاک دوستوں نے خنجر سے لہولہان کر کے سڑک کنارے پھینک دیا۔ یہ بدقسمت لڑکی زندہ تو نا بچ سکی لیکن دنیا سے جانے سے پہلے اپنے قاتل کا نام ضرور بتا گئی۔

دی مرر کے مطابق 19سالہ لزیٹا کوسٹا اپنے دوستوں 19 سالہ ڈینیل اور اس کی 25 سالہ گرل فرینڈ ملیسا کے ساتھ گاڑی میں بیٹھ کر گئی تھی۔ چند گھنٹے بعد اسے خنجر کے متعدد وار کرکے شدید زخمی حالت میں سان فرانسسکو کے قریب رات کے دو بجے سڑک کے

قریب پھینک دیا گیا۔
لزیٹا نے کمال ہمت کا مظاہرہ کیا اور جسم سے بہتے خون اور شدید زخموں کے باوجود رینگتی ہوئی 100 گز کا فاصلہ طے کر کے سڑک پر پہنچی جہاں سے گزرنے والی ایک گاڑی میں بیٹھے دو افراد نے اسے دیکھا۔ اسے شدید زخمی حالت میں ائیرایمبولینس کے ذریعے ہسپتال پہنچایا گیا جہاں اس نے آخری سانسیں لیتے ہوئے بتایاکہ اس کے قاتل کا نام ڈینیل گراس ہے۔ پولیس نے ڈینیل اور اس کی گرل فرینڈ کو گرفتارکرلیا ہے۔ ان سے تفتیش کی جارہی ہے لیکن قتل کے محرکات کا تاحال علم نہیں ہوسکا۔