ہمارے فون کے ساتھ چھیڑ خانی کیوں کی؟ درجنوں گاہک موبائل کمپنی ایپل پر برس پڑے،

ایپل نے اپنے پرانے آئی فون ماڈلز کی بیٹری لائف بڑھانے کے لیے ان میں ایک ایسی تبدیلی کر دی کہ جس پر صارفین بری طرح برانگیختہ ہو گئے ہیں اور 60 افراد نے تو ایپل کے خلاف مقدمہ بھی درج کروا دیا ہے

میل آن لائن کے مطابق ایپل نے کئی پرانے آئی فون ماڈلز کے لیے آپریٹنگ سسٹم آئی او ایس کا نیاورژن دیا ہے جس میں اس نے ان آئی فونز کی کارکردگی سست کر دی ہے تاکہ ان کی بیٹری لائف بہتر ہو سکے۔

کمپنی نے تو یہ اقدام صارفین کی سہولت کو مدنظر رکھتے ہوئے اٹھایا لیکن الٹا صارفین نے اس پر مقدمات کی بوچھاڑ کر دی ہے۔ مقدمات درج کروانے والے صارفین کا موقف ہے کہ ”کمپنی نے یہ اقدام صارفین کی سہولت کے لیے نہیں بلکہ انہیں نئے آئی فون ماڈلز خریدنے پر مجبور کرنے کے لیے اٹھایا ہے۔ کمپنی کے اس اقدام کی وجہ سے ہمیں شدید ذہنی پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے لہٰذا اسے ہرجانہ ادا کرنے کا حکم دیا جائے اورہمارے وکیلوں کی فیس بھی کمپنی سے لی جائے۔“قانونی ماہرین کا کہنا ہے کہ ”جب کسی ایک کمپنی کے خلاف 20سے زائد صارفین مقدمات درج کروا دیں تو وہ بہترین ’وَن کلاس ایکشن کیس‘ بن سکتا ہے۔ اس لحاظ سے ایپل کو بڑی مشکل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔“