شوہر باہر کی عورتوں میں منہ کیوں مارتا ہے۔؟

اگر شوہر گھر آتا ہے اور اپنی بیوی سے ٹھنڈا پانی یا اچھا کھانا کھانے کی خواہش کااظہار کرتاہے اور عورت انکار کر دیتی ہے تو وہ خود کو لر کے پاس جاکر پی سکتا ہے یاکسی بہترین ریسٹورینٹ میں جاکر بہترین و لذیذ کھانا تناول کر سکتا ہے ۔غور طلب بات یہ ہے کہ اگر شوہر بیوی سے ہم بستری اور مباشرت کی خواہش کا اظہار کرتا ہے اور بیوی انکارکر دیتی ہے توپھر شوہر کہاں جائے گا؟

ہوسکتا کہ باہر جاکر کسی حرام زنا کامرتکب ہویابیوی سے اسکا دل اچاٹ ہوجائے اور وہ کچھ اور سوچنے لگے۔جب بیویاں مباشرت سے زیادہ منع کرنے لگیں گی۔جاری ہے۔ توشوہر بھی حرام زنا کے زیادہ مرتکب ہونے لگیں گے پھر اس طرح سے معاشرہ آہستہ آہستہ ٹوٹ پھوٹ کاشکار ہونا شروع ہوجائے گا۔اسی وجہ سے شریعت نے اس قسم کی عورتوں کے شدید مذمت و عید سنائی ہے ۔

چنانچہ حدیث میں آپ ﷺ ارشاد فرماتے ہیں اگر مرد عورت کو بستر پر بلائے اور وہ منع کر دے توصبح ہونے تک فرشتے اس عورت پر لعنت کرتے رہتے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *