خادم اعلیٰ کی گڈ گورننس کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے، ترک کمپنی کے سخت ترین ایکشن نے پنجاب حکومت کے چھکے اڑا دیے

[ad_1]

لاہور(قدرت روزنامہ)پنجاب حکومت نے اورنج لائن میٹرو ٹرین منصوبے کی خاطر میٹرو بس سسٹم پر توجہ دینا چھوڑ دیا جس پر ترک بس کمپنی نے اپنے ساتھ رکھے جانے والے حکومتی رویے پر شدید برہمی کا اظہار کیا ہے ،گزشتہ 6روز سے میٹرو بس سسٹم بند ہونے سے کمپنی کو سوا تین کروڑ سے زائد کا نقصان ہوچکاجبکہ متعدد بار توجہ دلانے کے باوجود حکومت کی جانب سے نظر انداز کرنے پر ترک بس کمپنی شدید پریشان ہو گئی، گزشتہ 6 روز سے کلمہ چوک میں نابینا افراد کی جانب سے مطالبات کے حق میں احتجاج کیا جا رہا ہے جس سے 6روز سے میٹرو بس سسٹم بند ہے ،میٹرو بس سسٹم چلانے والی ترک کمپنی نے اس حوالے سے متعدد مرتبہ ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کو اقدامات کرنے کا کہا لیکن حکومت کی توجہ اورنج ٹرین پر ہے اور وہ اتھارٹی کی بات سننے کا تیار نہیں.

اتھارٹی کی جانب سے میٹرو بس کمپنی کو کہا گیا کہ اورنج ٹرین منصوبے کی افتتاحی تقریب کے بعد نابینا افراد کے مطالبات پورے کرکے ان کا احتجاج ختم کرایا جائیگا.
لیکن افتتاحی تقریب کے بعد بھی حکومت نے دلچسپی نہیں دکھائی، کمپنی نے حکومت کو بتایا 6 دن سروس نہ چلنے سے کمپنی کو 3 کروڑ 25 لاکھ سے زائد کا نقصان ہو چکا ہے . میٹر و بسیں روزانہ 15 ہزار کلومیٹر چلتی ہیں، فی کلومیٹر 360 روپے حکومت کمپنی کو ادا کرنے کی پابند ہے . 6 دنوں میں حکومت کو بھی ٹکٹنگ کی مد میں ایک کروڑ 80 لاکھ کا نقصان ہوا. روزانہ ڈیڑھ لاکھ مسافر سفری سہولیات سے محروم ہو چکے ہیں.( م ، ش )

..

[ad_2]

Source link