29 بیماریوں کا ایک ایسا نسخہ جس سے 29 بیماریوں کا علاج ہوتا ہے

کچھ عرصہ پہلے میری ایک صاحب سے ملاقات ھوئی – بات گھٹنوں اور جوڑوں کے دردوں کی چلی -بے ساختہ کہنے لگے – میں ستر سے اوپر چل رھا ھوں – اور مجھے یہ مسائل مسلسل گھیرے جا رہیں ھے لیکن میں نے اپنا علاج خود کیا اور پھر کہنے لگے کہ کچھ ہی ہفتے میں نے کیا مجھے واقعی بہت فائدہ ھوا اب جب بھی مجھے کوئی تکلیف ھوتی ھے – میں یہی ٹوٹکے آزما لیتا ھوں – اور مجھے بہت فائدہ ھوتا ھے – میں چونک پڑا کیونکہ ان کی ساری زندگی میڈیکل علاج معالجہ ریسرچ تحقیق میں گذری – ان کے منہ سے نکلے ھوئے بول پھر وہ ستر کی عمر سے آگے نکل رہیں تھے – اور بظاہر ان کی زندگی کو فٹنس کے قریب پایا – صحت اور تندرستی واقعی ایسی تھی جو قابل رشک …… مجھے بعد میں احساس ھوا * ان کی فٹنس کا راز اسی ٹوٹکے میں ھے –

تو میں فورا بولا کہ آپ وہ راز مجھے بتا سکتے ہیں – جس سے آپ کے جوڑ – کمر – پٹھے – اعصاب – اور جسم مطمن اور صحت مند ھوئے – قہقہہ لگا کر کہنے لگے آپ کو نہیں بتاوں گا تو کس کو بتاوں گا – لیکن ایک خطرہ ھے – آپ کانوں کے کچے ھے – آپ نے یہ چیز لکھ دینی ھے – میں ان کی خوش دلی پر مسرور ھوا – بے ساختہ بولا – یقینآ لکھنے کا پروگرام تو ھو گا – ظاھر ھے اس سے لاکھوں لوگ فائدہ پائیں گے – کہنے لگے چلو ایسا ھے میں خود ہی لکھ دیتا ھوں – کنویا مالٹا جو بلکل کٹھا ھو اسے کنو کہیں یا مالٹا کہیں یا فلٹر یا فروٹر کہیں – جتنا ذیادہ کٹھا ھو گا اتنا اس کا فائدہ اور تاثیر بہتر ھو گی – دو عدد لیں کر اس کا جوس نکال لیں اور جوس بھی ایسا نکالیں جس میں ریشے پھوک بیج سب کچھ ھو – اور ایک بڑا چمچ شہد اور ایک چھوٹا چمچ کاڈ لیور آئل ھو مطلب مچھلی کا تیل ڈال کر خوب مکس کریں – اتنا مکس کریں کہ جاگ بن جائے – پھر اس کو چھوٹے چھوٹے گھونٹ پینا شروع کر دیں – بڑے بڑے گھونٹ نہ پیئیں – اس سارے مرکب کو ختم کرنے میں کچھ وقت لگیں – بس صبح نہار منہ آپ پی لیں – سردی ھو یا گرمی – بارش ھو یا طوفان ہر موسم کے لئے – بوڑھا ھو یا جوان مرد ھو یا عورت سب کے لئے انوکھا بہترین ٹانک – لا جواب تحفہ ھے –

قارئین =- انھوں نے تو اس کو جوڑوں کے درد اور کمر کے درد کے لئے بنایا تھا – میں نے خود بنایا اور آزمایا اور بےشمار لوگوں کو دیا جس نے بھی کچھ عرصہ توجہ اور اعتماد سے استعمال کیا اس نے بہت فائدے پائے لیکن اس کے اس کے اور فائدے اتنے ذیادہ ھے -جو کہ ریسرچ اور تحقیق نے بھی ثابت کئے اور تجربات اور لوگوں کے مشاہدات نے بھی اس کو ثابت کیا – وہ اتنے ذیادہ اتنے ذیادہ کہ خود میری عقل حیران ھے – یہ کیسے ھو گیا –

(1) آخری عمر میں بھولنے Parkin sosn,s Disease کی بیماری Psoriasis جو اس وقت عالمی سطع پر پھیل چکی ھے اور مزید پھیل رہی ھے –
(2) جلد کی ایسی پتیلی نا مراد اور پرانی سے پرانی بیماریاں حتی کہ جلد ساری پھٹ گئی ھو – اس میں رعیشہ پڑ گیا ھو ‘ گندگی عفونت اور بدبو پھیل گئی ھو – ان سب کیلیے لا جواب طاقت اور تاثیر ھے – بعض لوگوں کے ناخن بلکل مردہ ھو جاتے ھے -اور اپنی شکل میں سیاہ ھو جاتے ھے – ان کے لئے بھی ایک بہترین خوشخبری ھے – اگر کچھ عرصہ اس نسخے کو استعمال کریں – کچھ دن کچھ ہفتے کچھ مہینے تو نہایت اس کے بہترین رزلٹ ملیں گے –
(3) چھوٹی آنت کی سوزش – اس کا پھول جانا اور چھوٹی انتوں کی پرانی سے پرانی بیماری اس کے لئے لا جواب مرہم بھی ھے اور شفا یابی کا نسخہ بھی –
(4) چھوٹی آنت کا السر – چھوٹی آنت کا السر جتنا بھی پرانا ھو اگر یہ دوائی کچھ عرصہ استعمال کی جائے تو اس سے بہت فائدہ حاصل ھوتا ھے –
(5) شیزوفرینیا – ٹینشن – اگزائٹی – ڈیپریشن کے لئے اس کا بدل دنیا اب تک پیش نہیں کر سکی –
(6) خون کی کمی -حمل سے پہلے – حمل کے بعد – بچوں میں – بڑوں میں – بوڑھوں میں – نوجوانوں میں – حادثات کے بعد یا بیماری میں یا کسی چوٹ یا کسی تکلیف کے بعد خون کی کمی کا آزالہ ھو جاتا ھے –
(7) الرجی – جلد کا متاثر ھونا اور خاص طور پر وہ موسمی الرجی جو خوشبودار درختوں کی پولن – یا کسی دواء یا کسی غذا سے ھوتی ھو حتی کہ گندم کی الرجی کے لئے انوکھا علاج ھے –
(8) دمہ – یہ مرکب دمہ کے پرانے مریضوں کو استعمال کرایا گیا بعض کو پہلے پہل کچھ تکلیف محسوس ھوئی لیکن بعد میں انہیں اس کا بہت اچھا رزلٹ ملا –
(9) الزائمر – رعیشہ جس میں ھاتھ پاوں کانپتے ہیں – گردن کانپتی ھے – جسم خاص طور پر ھاتھ پاوں پر اپنا کنٹرول نہیں -انسان کھا پی نہیں سکتا اس بیماری میں اس کے بہت اچھے نتائج ہیں –
(10) کیسڑول کی ذیادتی – چربیلے مادوں کا ذیادہ ھونا اور خون میں ایسے گندے مواد جس کے لئے تحویل عرصہ دوائی کھانی پڑتی ھے – جس میں یورک ایسڈ -یوریا کریٹنن – ان سب کیلیے لا جواب ھے –
(11) پرانے سے پرانا ڈیپریشن کسی بھی دوائی سے جو نہ جاتا ھو اس کے استعمال سے ختم ھو جاتا ھے –
(12) شوگر کے مریض اگر یہ دوائی استعمال کرنا چاہتے ھے تو وہ شہد شامل نہ کریں – چاہیں تو شہد استعمال کر بھی سکتے ھے – حتی کہ شوگر کے ایسے مریض جن کو زخم ھو گئے تھے ان کے لئے بھی بہت فائدہ مند ثابت ھوا ھے –
(13) آنکھ کا سوجھ جانا – نظر کا ختم ھو جانا – پھپھولا بن جانا – آنکھ کے پانی کی کمی – دن یا رات کو نظر نہ آنا – اور روز بروز نظر کا کم ھونا – عینک کے شیشے کا بڑھتے جانا – آزمانے کے بعد بہت فائدہ مند ثابت ھوا ھے –
(14) جوڑوں کا درد – خاص طور پر ماہواری ختم ھونے والی خواتین میں -بوڑھوں میں اور بڑھی عمر والوں میں اعتماد سے استعمال کریں –
(15) جوڑوں اور پٹھوں کا کھچاو – گردن کے پٹھے – سر کے پٹھے اعصاب کے لئے اس کے بہت بہترین رزلٹ ھے –
(16) وزن میں مسلسل کمی ھو رہی ھو – کوئی وجہ نظر نہ آتی ھو – اعتماد سے کچھ عرصہ استعمال کریں تو ان شاءاللہ تعالی اس سے وزن کی کمی میں فائدہ ھو گا –
(17) سینے کا جلنا – کھانے کے بعد تزابیت – پرانی گیس – تبخیر – پیٹ کا بڑھنا ایسے ٹھیک ھوتا ھے
کبھی تکلیف تھی ہی نہیں –
(18) بڑی آنت کا کینسر – جس میں علاج یہی ھوتا ھے – کہ آنت کا یہ حصہ کاٹ دیا جائے اس کیلئے بہت بہترین فارمولہ ثابت ھوا ھے –
(19) بڑی عمر میں اکثر پروسٹیٹ گلینڈ بڑھ جاتے ہیں – پیشاب رک رک کر آتا ھے – بہت تکلیف ھوتی ھے جو یہ فارمولہ استعمال کرے اس کو یہ تکلیف نہیں ھوتی اگر ھو تو کچھ عرصہ میں ختم ھو جاتی ھے –
(20)ماہواری کے دوران درد – تکلیف – بےچینی – گھبراہٹ یہ دوا اس کا بہترین حل ھے –
(21) چھاتی کا کینسر – جس میں فوری طور پر یہی کہا جاتا ھے کہ اس حصہ کو کاٹ دیا جائے – ہرگز نہیں – اعتماد سے کچھ عرصہ یہی استعمال کریں –
(22) وہ لوگ جن کو ذیادہ کھانے کا عارضہ لاحق ھوتا ھے مسلسل کھاتے ہی رہتے ھے – ان کا پیٹ بھڑتا ہی نہیں انہیں یہ چیز بہت فائدہ دیتی ھے –
(23) وساوس – نفسیاتی بیماریاں – ذہنی ٹینشن – الجھنیں جن کا علاج کر کر کے تھک گئے ھوں ایسے مسائل کا علاج صرف اسی دوا سے کریں –
(24) بچوں کی مورثی بیماریاں – اور ایسی مورثی بیماریاں جو خاندانی طور پر چل رہی ھوں – جب یہ دوائی استعمال کریں اس سے بہت فرق اور فائدہ ھوتا ھے –
(25) پیٹ کا السر – جس کو بھی دیا السر کا مریض وہ پیٹ کا ھو یا آنتوں کا بہت فائدہ ھوا –
(26) پرانا درد سر – پرانا درد سر ایسی چیز ھے جو بہت طاقتور گولیاں کھانے پر مجبور کر دیتا ھے پرانے درد سر میں مبتلا مریض اعتماد سے یہی دوائی استعمال کریں –
(27) جو حاملہ خواتین بچے کی پیدائش سے پہلے یہ دوائی استعمال کریں گی ان کے درد میں بلکل کمی ھو جاتی ھے حتی کہ پتہ بھی نہیں چلتا اور درد ختم ھو جاتا ھے –
(28) تیز ہارٹ بیٹ یعنی دل کی دھڑکن خود بخود تیز ھو یا تھوڑی سی بات سنتے ہی دل کی دھڑکن بہت ذیادہ تیز ھو جائے تو اس کیلئے بہت اعلی درجہ کی دوا ھے –
(29) خواتین کی پرانی سے پرانی لیکوریا رحم کا انفیکشن اور اندرونی ورم اس دوا سے بہت حد تک ختم ھو جاتے ہیں

تلبینہ کیا ہے اور رسولﷺکو یہ اتنا پسند کیوں تھا

ﺭﺳﻮﻝ ﺍﻟﻠﮧ ﷺ ﮐﮯ ﺍﮨﻞ ﺧﺎﻧﮧ ﻣﯿﮟ ﺳﮯ ﺟﺐ ﮐﻮﺋﯽ ﺑﯿﻤﺎﺭ ﮨﻮﺗﺎ ﺗﮭﺎ ﺗﻮ ﺣﮑﻢ ﮨﻮﺗﺎ ﮐﮧ ﺍﺱ ﮐﯿﻠﺌﮯ ﺗﻠﺒﯿﻨﮧ ﺗﯿﺎﺭ ﮐﯿﺎ ﺟﺎﺋﮯ۔ ﭘﮭﺮ ﻓﺮﻣﺎﺗﮯ ﺗﮭﮯ ﮐﮧ ﺗﻠﺒﯿﻨﮧ ﺑﯿﻤﺎﺭ ﮐﮯ ﺩﻝ ﺳﮯ ﻏﻢ ﮐﻮ ﺍُﺗﺎﺭ ﺩﯾﺘﺎ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﺍﺱ ﮐﯽ ﮐﻤﺰﻭﺭﯼ ﮐﻮ ﯾﻮﮞ ﺍﺗﺎﺭ ﺩﯾﺘﺎ ﮨﮯ ﺟﯿﺴﮯ ﮐﮧ ﺗﻢ ﻣﯿﮟ ﺳﮯ ﮐﻮﺋﯽ ﺍﭘﻨﮯ ﭼﮩﺮﮮ ﮐﻮ ﭘﺎﻧﯽ ﺳﮯ ﺩﮬﻮ ﮐﺮﺍﺱ ﺳﮯ ﻏﻼﻇﺖ ﺍُﺗﺎﺭ ﺩﯾﺘﺎ ﮨﮯ۔(”ﺍﺑﻦ ﻣﺎﺟﮧ) *ﺭﺳﻮﻝ ﺍﻟﻠﮧﷺ ﻧﮯ ﺣﻀﺮﺕ ﺟﺒﺮﺋﯿﻞؑ ﺳﮯ ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ ﮐﮧ: ﺟﺒﺮﺋﯿﻞؑ ﻣﯿﮟ ﺗﮭﮏ ﺟﺎﺗﺎ ﮨﻮﮞ۔ ﺣﻀﺮﺕ ﺟﺒﺮﺋﯿﻞؑ ﻧﮯ ﺟﻮﺍﺏ ﻣﯿﮟ ﻋﺮﺽ ﮐﯿﺎ:ﺍﮮ ﺍﻟﻠﻪ ﮐﮯ ﺭﺳﻮﻝﷺ ﺁﭖ ﺗﻠﺒﯿﻨﮧ ﺍﺳﺘﻌﻤﺎﻝ ﮐﺮﯾﮟ*

ﺁﺝ ﮐﯽ ﺟﺪﯾﺪ ﺳﺎﺋﯿﻨﺴﯽ ﺗﺤﻘﯿﻖ ﻧﮯ ﯾﮧ ﺛﺎﺑﺖ ﮐﯿﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺟﻮ ﻣﯿﮟ ﺩﻭﺩﮪ ﮐﮯ ﻣﻘﺎﺑﻠﮯ ﻣﯿﮟ10ﮔﻨﺎ ﺫﯾﺎﺩﮦ ﮐﯿﻠﺸﯿﺌﻢ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﭘﺎﻟﮏ ﺳﮯ ﺫﯾﺎﺩﮦ ﻓﻮﻻﺩ ﻣﻮﺟﻮﺩ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ، ﺍﺱ ﻣﯿﮟ ﺗﻤﺎﻡ ﺿﺮﻭﺭﯼ ﻭﭨﺎﻣﻨﺰ ﺑﮭﯽ ﭘﺎﺋﮯ ﺟﺎﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﭘﺮﯾﺸﺎﻧﯽ ﺍﻭﺭ ﺗﮭﮑﻦ ﮐﯿﻠﺌﮯ ﺑﮭﯽ ﺗﻠﺒﯿﻨﮧ ﮐﺎ ﺍﺭﺷﺎﺩ ﻣﻠﺘﺎ ﮨﮯ۔ *ﻧﺒﯽ ﷺ ﻓﺮﻣﺎﺗﮯ ﮐﮧ ﯾﮧ ﻣﺮﯾﺾ ﮐﮯ ﺩﻝ ﮐﮯ ﺟﻤﻠﮧ ﻋﻮﺍﺭﺽ ﮐﺎ ﻋﻼﺝ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﺩﻝ ﺳﮯ ﻏﻢ ﮐﻮ ﺍُﺗﺎﺭ ﺩﯾﺘﺎ ﮨﮯ۔(”ﺑﺨﺎﺭﯼ’ﻣﺴﻠﻢ’ ﺗﺮﻣﺬﯼ’ﻧﺴﺎﺋﯽ’ﺍﺣﻤﺪ*) ﺟﺐ ﮐﻮﺋﯽ ﻧﺒﯽ ﷺ ﺳﮯ ﺑﮭﻮﮎ ﮐﯽ ﮐﻤﯽ ﮐﯽ ﺷﮑﺎﯾﺖ ﮐﺮﺗﺎ ﺗﻮ ﺍٓﭖ ﺍﺳﮯ ﺗﻠﺒﯿﻨﮧ ﮐﮭﺎﻧﮯ ﮐﺎ ﺣﮑﻢ ﺩﯾﺘﮯ ﺍﻭﺭﻓﺮﻣﺎﺗﮯ ﮐﮧ ﺍﺱ ﺧﺪﺍ ﮐﯽ ﻗﺴﻢ ﺟﺲ ﮐﮯ ﻗﺒﻀﮧ ﻣﯿﮟ ﻣﯿﺮﯼ ﺟﺎﻥ ﮨﮯ ﯾﮧ ﺗﻤﮩﺎﺭﮮ ﭘﯿﭩﻮﮞ ﺳﮯ ﻏﻼﻇﺖ ﮐﻮ ﺍﺱ ﻃﺮﺡ ﺍﺗﺎﺭ ﺩﯾﺘﺎ ﮨﮯ ﺟﺲ ﻃﺮﺡ ﮐﮧ ﺗﻢ ﻣﯿﮟ ﺳﮯ ﮐﻮﺋﯽ ﺍﭘﻨﮯ ﭼﮩﺮﮮ ﮐﻮ ﭘﺎﻧﯽ ﺳﮯ ﺩﮬﻮ ﮐﺮ ﺻﺎﻑ ﮐﺮﻟﯿﺘﺎ ﮨﮯ
۔ﻧﺒﯽ ﭘﺎﮎ ﷺ ﮐﻮﻣﺮﯾﺾ ﮐﯿﻠﺌﮯ ﺗﻠﺒﯿﻨﮧ ﺳﮯ ﺑﮩﺘﺮ ﮐﻮﺋﯽ ﭼﯿﺰ ﭘﺴﻨﺪ ﻧﮧ ﺗﮭﯽ۔ ﺍﺱ ﻣﯿﮟ ﺟَﻮ ﮐﮯ ﻓﻮﺍﺋﺪ ﮐﮯ ﺳﺎﺗﮫ ﺳﺎﺗﮫ ﺷﮩﺪ ﮐﯽ ﺍﻓﺎﺩﯾﺖ ﺑﮭﯽ ﺷﺎﻣﻞ ﮨﻮﺟﺎﺗﯽ ﺗﮭﯽ۔ ﻣﮕﺮ ﻭﮦ ﺍﺳﮯ ﻧﯿﻢ ﮔﺮﻡ ﮐﮭﺎﻧﮯ’ﺑﺎﺭ ﺑﺎﺭ ﮐﮭﺎﻧﮯ ﺍﻭﺭ ﺧﺎﻟﯽ ﭘﯿﭧ ﮐﮭﺎﻧﮯ ﮐﻮ ﺯﯾﺎﺩﮦ ﭘﺴﻨﺪ ﮐﺮﺗﮯ ﺗﮭﮯ۔(ﺑﮭﺮﮮ ﭘﯿﭧ ﺑﮭﯽ ﯾﻌﻨﯽ ﮨﺮ ﻭﻗﺖ ﮨﺮ ﻋﻤﺮ ﮐﺎ ﻓﺮﺩ ﺍﺱ ﮐﻮ ﺍﺳﺘﻌﻤﺎﻝ ﮐﺮﺳﮑﺘﺎ ﮨﮯ۔ ﺻﺤﺖ ﻣﻨﺪ ﺑﮭﯽ’ﻣﺮﯾﺾ ﺑﮭﯽ) ﻧﻮﭦ: *ﺗﻠﺒﯿﻨﮧ ﻧﺎﺻﺮﻑ ﻣﺮﯾﻀﻮﮞ ﮐﯿﻠﺌﮯ ﺑﻠﮑﮧ ﺻﺤﺖ ﻣﻨﺪﻭﮞ ﮐﯿﻠﺌﮯ ﺑﮩﺖ ﺑﮩﺘﺮﯾﻦ ﭼﯿﺰ ﮨﮯ۔ ﺑﭽﻮﮞ ﺑﮍﻭﮞ ﺑﻮﮌﮬﻮﮞ ﺍﻭﺭ ﮔﮭﺮ ﺑﮭﺮ ﮐﮯ ﺍﻓﺮﺍﺩ ﮐﯿﻠﺌﮯ ﻏﺬﺍ’ ﭨﺎﻧﮏ ﺑﮭﯽ’ﺩﻭﺍ ﺑﮭﯽ ﺷﻔﺎﺀ ﺑﮭﯽ ﺍﻭﺭ ﻋﻄﺎ ﺑﮭﯽ۔۔۔۔ ﺧﺎﺹ ﻃﻮﺭ ﭘﺮ ﺩﻝ ﮐﮯ ﻣﺮﯾﺾ ﭨﯿﻨﺸﻦ’ﺫﮨﻨﯽ ﺍﻣﺮﺍﺽ’ﺩﻣﺎﻏﯽ ﺍﻣﺮﺍﺽ’ ﻣﻌﺪﮮ’ﺟﮕﺮ’ﭘﭩﮭﮯ ﺍﻋﺼﺎﺏ ﻋﻮﺭﺗﻮﮞ ﺑﭽﻮﮞ ﺍﻭﺭ ﻣﺮﺩﻭﮞ ﮐﮯ ﺗﻤﺎﻡ ﺍﻣﺮﺍﺽ ﮐﯿﻠﺌﮯ ﺍﻧﻮﮐﮭﺎ ﭨﺎﻧﮏ ﮨﮯ۔* “ﺟﻮ” ——–ﺟﺴﮯ ﺍﻧﮕﺮﯾﺰﯼ ﻣﯿﮟ”ﺑﺎﺭﻟﮯ” ﮐﮩﺘﮯ ﮨﯿﮟ-
ﺍﺱ ﮐﻮ ﺩﻭﺩﮪ ﮐﮯ ﺍﻧﺪﺭ ﮈﺍﻝ ﺩﯾﮟ ۔ ﭘﻨﺘﺎﻟﯿﺲ ﻣﻨﭧ ﺗﮏ ﺩﻭﺩﮪ ﻣﯿﮟ ﮔﻠﻨﮯ ﺩﯾﮟ ﺍﻭﺭ ﺍﺳﮑﯽ ﮐﮭﯿﺮ ﺳﯽ ﺑﻨﺎﺋﯿﮟ ۔ ﺍﺱ ﮐﮭﯿﺮ ﮐﮯ ﺍﻧﺪﺭ ﺁﭖ ﭼﺎﮬﯿﮟ ﺗﻮ ﺷﮭﺪ ﮈﺍﻝ ﺩﯾﮟ ﯾﺎ ﮐﮭﺠﻮﺭ ﮈﺍﻝ ﺩﯾﮟ ۔ﺍﺳﮯ ﺗﻠﺒﯿﻨﮧ(Talbeena)ﮐﮩﯿﮟ ﮔﮯ— *ﺗﺮﮐﯿﺐ:* ۔ﺩﻭﺩﮪ ﮐﻮ ﺍﯾﮏ ﺟﻮﺵ ﺩﮮ ﮐﺮ ﺟﻮ ﺷﺎﻣﻞ ﮐﺮ ﻟﯿﮟ۔ ۔ ﮨﻠﮑﯽ ﺁﻧﭻ ﭘﺮ ۴۵ ﻣﻨﭧ ﺗﮏ ﭘﮑﺎﺋﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﭼﻤﭽﮧ ﭼﻼﺗﮯ ﺭﮨﯿﮟ۔ ۔ ﺟﻮ ﮔﻞ ﮐﺮ ﺩﻭﺩﮪ ﻣﯿﮟ ﻣﻞ ﺟﺎﺋﮯ ﺗﻮ ﮐﮭﺠﻮﺭ ﻣﺴﻞ ﮐﺮ ﺷﺎﻣﻞ ﮐﺮﻟﯿﮟ۔ ۔ ﻣﯿﭩﮭﺎ ﮐﻢ ﻟﮕﮯ ﺗﻮ ﺗﮭﻮﮌﺍ ﺷﮩﺪ ﻣﻼ ﻟﯿﮟ۔
۔ﮐﮭﯿﺮ ﮐﯽ ﻃﺮﺡ ﺑﻦ ﺟﺎﺋﮯ ﮔﯽ۔ ۔ ﭼﻮﻟﮩﮯ ﺳﮯ ﺍﺗﺎﺭ ﮐﺮ ﭨﮭﻨﮉﺍ ﮐﺮ ﻟﯿﮟ۔ ۔ ﺍﻭﭘﺮ ﺳﮯ ﺑﺎﺩﺍﻡ ، ﭘﺴﺘﮯ ﮐﺎﭦ ﮐﺮ ﭼﮭﮍﮎ ﺩﯾﮟ۔ (ﮐﮭﺠﻮﺭ ﮐﯽ ﺟﮕﮧ ﺷﮩﺪ ﺑﮭﯽ ﻣﻼ ﺳﮑﺘﮯ ﮨﯿﮟ) *ﻃﺒﯽ ﻓﻮﺍﺋﺪ:* ﻃﺒﯽ ﺍﻋﺘﺒﺎﺭ ﺳﮯ ﺍﺱ ﮐﮯ ﻣﺘﻌﺪﺩ ﻓﻮﺍﺋﺪ ﺑﯿﺎﻥ ﮐﺌﮯ ﺟﺎﺗﮯ ﮨﯿﮟ-ﯾﮧ ﻏﺬﺍ: 1۔ﻏﻢ ،(Depression) 2۔ ﻣﺎﯾﻮﺳﯽ، 3۔ ﮐﻤﺮﺩﺭﺩ، 4۔ ﺧﻮﻥ ﻣﯿﮟ ﮨﯿﻤﻮﮔﻠﻮﺑﻦ ﮐﯽ ﺷﺪﯾﺪ ﮐﻤﯽ، 4۔ ﭘﮍﻫﻨﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﺑﭽﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺣﺎﻓﻈﮧ ﮐﯽ ﮐﻤﺰﻭﺭﯼ، 5۔ ﺑﻬﻮﮎ ﮐﯽ ﮐﻤﯽ، 6۔ ﻭﺯﻥ ﮐﯽ ﮐﻤﯽ، 7۔ ﮐﻮﻟﯿﺴﭩﺮﻭﻝ ﮐﯽ ﺯﯾﺎﺩﺗﯽ، 8۔ ﺫﯾﺎﺑﯿﻄﺲ ﮐﮯ ﻣﺮﯾﻀﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺑﻠﮉ ﺷﻮﮔﺮ ﻟﯿﻮﻝ ﮐﮯ ﺍﺿﺎﻓﮧ، 9۔ ﺍﻣﺮﺍﺽ ﺩﻝ،ﺍﻧﺘﮍﯾﻮﮞ، 10۔ ﻣﻌﺪﮦ ﮐﮯ ﻭﺭﻡ، 11۔ ﺍﻟﺴﺮﮐﯿﻨﺴﺮ، 12۔ ﻗﻮﺕ ﻣﺪﺍﻓﻌﺖ ﮐﯽ ﮐﻤﯽ، 13۔ ﺟﺴﻤﺎﻧﯽ ﮐﻤﺰﻭﺭﯼ، 14۔ ﺫﮨﻨﯽ ﺍﻣﺮﺍﺽ، 15۔ ﺩﻣﺎﻏﯽ ﺍﻣﺮﺍﺽ، 16۔ ﺟﮕﺮ، 17۔ ﭘﭩﮭﮯ ﮐﮯ ﺍﻋﺼﺎﺏ، 18۔ ﻧﮉﮬﺎﻟﯽ 19.ﻭﺳﻮﺳﮯ (Obsessions) .20ﺗﺸﻮﯾﺶ(Anxiety) ﮐﮯ ﻋﻼﻭﮦ ﺩﯾﮕﺮ ﺑﮯ ﺷﻤﺎﺭ ﺍﻣﺮﺍﺽ ﻣﯿﮟ ﻣﻔﯿﺪ ﮨﮯﺍﻭﺭ ﯾﮧ ﺑﮭﯽ ﺍﭘﻨﯽ ﺟﮕﮧ ﺍﯾﮏ ﺣﻘﯿﻘﺖ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺟﻮ ﻣﯿﮟ ﺩﻭﺩﮪ ﺳﮯ ﺯﯾﺎﺩﮦ ﮐﯿﻠﺸﯿﻢ ﺍﻭﺭ ﭘﺎﻟﮏ ﺳﮯ ﺯﯾﺎﺩﮦ ﻓﻮﻻﺩ ﭘﺎﯾﺎ ﺟﺎﺗﺎ ﮨﮯﺍﺱ ﻭﺟﮧ ﺳﮯ ﺗﻠﺒﯿﻨﮧ ﮐﯽ ﺍﮨﻤﯿﺖ ﺑﮍﮪ ﺟﺎﺗﯽ ﮨﮯ”۔

خانہ کعبہ کے عین اوپر سے کوئی چیز نہیں گزر سکتی، مگر کیوں؟ انتہائی معلوماتی پوسٹ ضرور پڑھیں

خانہ کعبہ، کعبہ یا بیت اللہ مسجد حرام کے وسط میں واقع ایک عمارت ہے، جو مسلمانوں کا قبلہ ہے، جس کی طرف رخ کرکے وہ عبادت کیا کرتے ہیں۔ یہ دین اسلام کا مقدس ترین مقام ہے۔ صاحب حیثیت مسلمانوں پر زندگی میں ایک مرتبہ بیت اللہ کا حج کرنا فرض ہے۔

خانہ کعبہ کے اندر تین ستون اور دو چھتیں ہیں۔ باب کعبہ کے متوازی ایک اور دروازہ تھا دیوار میں نشان نظر آتا ہے یہاں نبی پاک صلی اللہ وسلم نماز ادا کیا کرتے تھے۔ کعبہ کے اندر رکن عراقی کے پاس باب توبہ ہے جو المونیم کی 50 سیڑھیاں ہیں جو کعبہ کی چھت تک جاتی ہیں۔ چھت پر سوا میٹر کا شیشے کا ایک حصہ ہے جو قدرتی روشنی اندر پہنچاتا ہے۔ کعبہ کے اندر سنگ مرمر کے پتھروں سے تعمیر ہوئی ہے اور قیمتی پردے لٹکے ہوئے ہیں جبکہ قدیم ہدایات پر مبنی ایک صندوق بھی اندر رکھا ہوا ہے۔

کعبہ کی موجودہ عمارت کی آخری بار 1996ءمیں تعمیر کی گئی تھی اور اس کی بنیادوں کو نئے سرے سے بھرا گیا تھا۔ کعبہ کی سطح مطاف سے تقریباً دو میٹر بلند ہے جبکہ یہ عمارت 14 میٹر اونچی ہے۔ کعبہ کی دیواریں ایک میٹر سے زیادہ چوڑی ہیں جبکہ اس کی شمال کی طرف نصف دائرے میں جوجگہ ہے اسے حطیم کہتے ہیں اس میں تعمیری ابراہیمی کی تین میٹر جگہ کے علاوہ وہ مقام بھی شامل ہے جو حضرت ابراہیم علیہ السلام نے حضرت ہاجرہ علیہ السلام اور حضرت اسماعیل علیہ السلام کے رہنے کے لئے بنایا تھا جسے باب اسماعیل کہا جاتا ہے۔

خانہ کعبہ کے عین اوپر سے کوئی چیز نہیں گزر سکتی، کیونکہ:
جدید سائنس کے تحت کی جانے والی تمام پیمائشوں اور پیمانوں کے مطابق خانہ کعبہ بلا شک و شبہ زمین کا مرکز ہے۔ یہ وہ مقام ہے جو زمین کے بالکل بیچ میں واقع ہے۔ زمین کے درمیان کا مقام ہونے کی وجہ سے قدرتی طور پر زمین کی تمام کشش ثقل کا مرکز بھی یہی مقام ہےاور یہی وہ خاصیت ہے جو اسے دوسرے مقامات سے منفرد بناتی ہے۔

زمین کی کشش ثقل کا مرکز ہونے کی وجہ سے یہاں شدید مقناطیسی کشش پائی جاتی ہے یہی وجہ ہے کہ یہاں کسی چیز کا پرواز کرنا نا ممکن ہے۔اگر آپ اپنے ہاتھ میں مقناطیس کا ٹکڑا لیں تو آپ دیکھیں گے کہ اس کے بالکل درمیان میں کوئی چیز نہیں چپک سکتی، مقناطیسی کشش کے اثر سے وہ شے ہوا میں جھولتی ہوئی مقناطیس کے دائیں یا بائیں طرف چپک جائے گی۔بالکل یہی فارمولہ خانہ کعبہ کے اوپر بھی لاگو ہوتا ہے۔

مرکزی مقام اور مقناطیسی کشش کی شدت ہونے کے سبب یہ نا ممکن ہے کہ کوئی طیارہ حتیٰ کہ پرندہ بھی خانہ کعبہ کے عین اوپر پرواز کرسکے۔ البتہ خانہ کعبہ کے ارد گرد لاتعداد پرندے پرواز کرتے ہوئے دیکھے جاسکتے ہیں۔یہاں ہم آپ کو ایک اور حیرت انگیز معلومات دیتے چلیں کہ خانہ کعبہ سے جو روشنی نکلتی ہے وہ آسمانوں اور خلاؤں کا سینہ چیر کر بنا کسی رکاوٹ کے سیدھا ساتویں آسمان تک جا پہنچتی ہے جہاں بیت المعمور واقع ہے۔

قرآن کریم کے مطابق بیت المعمور فرشتوں کا خانہ کعبہ ہے اور ہر روز 70 ہزار فرشتے اس کعبے کا طواف کرتے ہیں۔ زمین پر بنایا گیا خانہ کعبہ اسی کعبے کی طرز پر بنایا گیا ہے جس کا حکم خدا نے دیا تھا۔

پہلے انکار مگر پھر جب بچوں کی نیک ماں زناکے لیے مجبورہوگئی۔۔ یہ واقعہ تمام مسلمانوں کو ضرور پڑھنا چاہئے

ایک دفعہ کاذکرہے کہ دودوست جن میں بہت پیاراورالفت تھی ۔پیاراس قدرتھاکہ دونوں کی کوئی بھی بات ایک دوسرے سے پوشیدہ نہ تھی۔ایک دوست کی کیفیت اورپوزیشن یہ تھی کہ وہ اپنے ہاتھ کوآگ کے اندرڈال دیتاتوآگ اس کے ہاتھ پراثرنہ کرتی۔دوست نے پوچھاکہ یہ بتاتوآگ کے اندرجلتے ہوئے انگاروں میں ہاتھ ڈال لیتا ہے۔ لیکن آگ تیرے ہاتھ پراثرکیوں نہیں کرتی وجہ کیاہےدوست نے کہاکہ بڑی طویل داستان ہے پھرکبھی سنائیں گے۔دوست نے کہاکہ نہیں یہ کیادوستی ہے دوست بھی بناتاہے اوررازبھی چھپاتاہے۔

دوست تووہ نہیں ہوتاجس سے راز چھپتے ہیں دوست تووہ ہوتاہے جوراز نہیں چھپاتابتاکیابات ہے ۔دوست کے اصرارپراس نے کہاکہ دیکھ توجانتاہے کہ میں مالدارہوں میراباپ بھی مالدارتھا۔میں نے جب جوانی کی دہلیزپرقدم رکھااللہ تعالیٰ نے مجھے حسن بھی دیاطاقت اورقوت بھی دی توپھرہوایوں کہ ایک رات میں گرمی کے موسم میں اپنے بالاخانے پرٹہلنے کے لیے رات کوگیاتھاتومیں نے کیا دیکھاکہ میرے سامنے والے گھرکے بالاخانے پرایک خوبصورت لڑکی ٹہل رہی تھی اس کاچہرہ چاندمیں ایساچمکتانظرآیاکہ میں دل دے بیٹھامجھے اس سے پیا رہوگیامیں نے اس سے کہاکہ اے لڑکی میں تیرے قدموں میں دولت کاانبارلگادوں گا۔

بس میں جوچاہتاہوں وہ توکرلےلڑکی نے میری ایک نہ سنی دن گزرتے گئے رات گزرتی گئی زندگی تمام ہوتی گئی حالانکہ یہ ہواکہ میں نے کوئی دن کسرنہ چھوڑی کوئی رات کسرنہ چھوڑی ملنے کی کوشش کرتادولت کی لالچ دیتامال کی لالچ دیتاہرچیز کی میں نے لالچ دی لیکن وہ لڑکی ٹس سے مس نہ ہوئی اس نے میری ایک نہ سنی ۔

چنددنوں کے بعداس کیغریب گھرانے میں شادی ہوگئی۔اس کے تین بچے ہوگئے ایک وقت ایساآیاکہ ہمارے علاقے میں قحط سالی چھاگئی۔میرے والدنے مجھ سے کہاکہ بیٹے اس وقت غریب بھوکے مررہے ہیں تواناج اورکھانے پینے کی چیزیں غریبوں میں تقسیم کر۔میں بیٹھاہواتھااورلوگوں کوکھانے پینے کی چیزیں تقسیم کررہاتھاایسے میں میں نے دیکھاکہ جسے میں چاہتاتھاوہ لڑکی بھی قطارمیں کھڑی تھی۔میں نے اپنے نوکروں کوکہاکہ تم لوگوں کونمٹالومیں ابھی آتاہوں میں نے اشارہ کرکے اس لڑکی کواپنے پا س بلایااورپوچھاکہ اے لڑکی توکیوں آئی ہے۔

اس نے کہاکہ اے نوجوان میں تین بچوں کی ماں ہومیں ان کی بھوک دیکھ نہیں سکتی میرے بچے بلک رہے ہیں تجھے معلوم ہے کہ ہرغریب اورمزدورامیروں کے دروازے پربھیک مانگ رہاہے۔میرے بچوںکاتڑپنامجھ سے دیکھانہیں گیامیں تیرے درواز ےپرآگئی ہوں خدارامیری کچھ مددکردے۔ اس نوجوان نے کہاکہ میرے د ل میں خیا ل آیاکہ آ ج یہ مجبورہوکرآئی ہے میں اس کی مجبوری کابھرپورفائدہ اٹھائوں گا۔میں نے کہاکہ اے لڑکی میں تیرے قدموں میں دولت کاانبارلگادوں گامیری ایک شرط ہے کہ تومیری اس خواہش کوپوراکردےجوپہلے دن میں نے رکھی تھی یعنی کہ اس نوجوان نے اس لڑکی کوزناکی دعوت دی۔

ورنہ سن لے سب کوسب ملے گااورتجھے کچھ نہیں ملے گا۔اس لڑکی نے کہاکہ اللہ سے معافی مانگ لذت کے لیے گناہ مت کرلذت چلی جائے گی اورگناہ باقی رہے گااس نوجوان نے کہاکہ زناکریاپھرپلٹ جا۔وہ پلٹی اورجب وہ واپس مڑی توبچوں نے کہاکہ ماں بھوک لگی ہےاس نے تسلی دی پھربچوں کی تڑپ دیکھ نہ سکی اورپھرپلٹی پھرآئی توکہاکہ خداکے لیے رحم کر۔

نوجوان نے کہاکہ میری خواہش پوری کرورنہ تیری مددنہیں ہوگی۔جب پھرتیسری بارلوٹی توبچوں نے کہاکہ ما ں یاتوہمارے لیے کھانے کاانتظام کریاپھرہماراگلہ گھونٹ دے ۔پھرا س نے سوچاکہ چلی جاتی ہوں زناکرلیتی ہوں پھرخداسے معافی مانگ لوں گی۔بچوں کی جان توبچ جائے گی پھروہ اس کے کمرے میں گئی اورکہاکہ خداکے لیے رحم کرنوجوان نے کہاکہ میں نے کہاکہ تومیری خواہش پوری کردے میں تیری خواہش پوری کردوں گاجب لڑکی کہ منہ سے نکلنے لگاکہ میں تیارہوں تواس کے دل اندرخوف خداپیداہوجاتاہے۔

اوراس کے ذہن میں خیال آتاہے کہ رسول اللہ ؐ نے فرمایاکہ جواللہ کے ڈرسے گناہ چھوڑ دے اللہ تعالیٰ اس کوایسی جگہ سے روزی دیتاہے جس کااس کے وہم وگماں میں بھی نہیں ہوتااس نے کہاکہ اے نوجوان سن لے اپنے ایک ایک بچے کوتڑپ تڑپ کرمرتاتودیکھ لوں گی۔لیکن کبھی اپنے اللہ کی نافرمانی نہیں کروں گی اوراب کی بارمیں واپس نہیں آئوں گی ۔گھرجاکربیٹوں سے کہاکہ صبرکروابھی کھاناآجائے گامصلیٰ بچھاکربیٹھ گئی اوراللہ تعالیٰ سے دعاکی کہ اے اللہ تونے چونچ دی ہے تودانابھی توہی دے گا۔اے رب کریم میرے بچوں کے لیے کھانےکابندوبست کردے ابھی جملے مکمل نہیں ہوئے تھے کہ درواز ے پردستک ہوئی وہ نوجوان دروازے پرکھڑ اتھا۔

ساتھ اس کے نوکربھی تھے لڑکی نے گرج کرپوچھاکہ اب کیوں آیاہے اس نوجوان نے کہاکہ مجھے معاف کردے۔جب توغریب ہوکراللہ سے اتناڈرتی ہے تومجھے مالدارہوکراللہ تعالیٰ سے کتناڈرناچاہیےاب میرادل بدل چکاہے اب توکیامیں کسی عورت کوبری نظرسے نہیں دیکھوں گامیری بہن لے اورمیری طرف سے یہ تحفہ قبول کرلے آج کے بعدمیں تجھے بہن کہتاہوں لڑکی نے کہاکہ رک جاپھرشکرکاسجدہ کیااوردعاکی اے اللہ اگریہ اپنے قول میں سچاہے تواس پردنیاکی اورجہنم کی آگ حرام کردےوہ نوجوان اپنے دوست سے کہتاہے کہ اللہ سے ڈرنے والی اس لڑکی کی دعاکااثرہے کہ میں دنیاکی آگ میں ہاتھ ڈالتاہوں توآگ میرے ہاتھ پراثرنہیں کرتی امیدہے کہ جہنم کی آگ بھی مجھ پراثرنہیں کرے گی

کالے جادو کی 20 اہم نشانیاں جو یقینا آپ نہیں جانتے

جاگتے ہوئے جادو کی علامات
۔جاگنے کے بعد جسم کا درد کرنا بہت تھکاوٹ محسوس کرنا:۔۔جاری ہے ۔

۔طبیعت میں چڑچڑا پن اورتنھائی پسند ہو جانا۔

۔چھوٹی چھوٹی باتوں پر شدید غصہ آنا اور اگر غلطی اپنی بھی ہو تب بھی اقرار نہ کرنا۔

۔رشتہ داروں گھر والوں اور دوست احباب سے بلاوجہ اچانک بڑے بڑے جھگڑے پیدا ہو جانا بہت زیادہ شکوک پیدا ہونا ازدواجی معاملات منقطع ہو جانا۔

۔ہر وقت یہ محسوس ہونا کہ کوئی دیکھ رہا ہے کوئی میرے ساتھ ہے انجانا سا خوف کہ گھر سے نکلا تو مر جاوں گا موت کے وسوے آنا کہ آج مر جاوں گا کل مر جاوں گا۔

۔ذھن کا ماؤف ہو جانا سوچنے سمجھنے کی صلاحیت ختم ہو جانامحسوس کرنا کہ یہ کام کوئی زبردستی کروا رہا ہے یا کہلوا رہا ہے گھر والوں بیوی بچوں والدین بہن بھائیوں سے نفرت محسوس کرنا غیر ارادی حرکات کا سر زد ہونا۔۔جاری ہے ۔

۔سر سینے کمر کے نچلے حصے یا کندھوں میں دباو بوجھ اور درد محسوس ہونا جسم کے کسی ایک حصے میں عموما سر یا معدے میں مستقل درد رہنا اور دوائی سے افاقہ نہ ہونا اور متلی ہونا یا قے آنے کا احساس ہونا لیکن نہ آنا پاوں کی ایڑیوں اور پنڈلیوں میں درد رہنا۔

۔آنکھوں میں تیز چمک کا پیدا ہونا سانس لینے میں تنگی ہونا اور دل کی دھڑکن کا تیز ہونا۔

۔سستی کا عادی ہو جانا بکثرت جمائیاں آنا بہت زیادہ بھولنا اور بکثرت نیند کا آنا۔۔

۔نماز قرآن اذان وغیرہ سے کراھت تنگی محسوس ہونا اور دین کے بارے کفریہ خیالات آنا مسجد جانے سے گھبرانا دل کا تنگ پڑنا بیت الخلاء میں دیر تک ٹہرنا اور گناہوں کی جانب شدت سے لپکنا۔۔جاری ہے ۔

۔بلاوجہ رونے کا دل کرنا گھر میں دل نہ لگنا بے چین رہنا۔

۔ایسا محسوس ہونا کہ کوئی آوازیں دے رہا ہے۔

۔جسم میں کٹ لگنا خون کے چھینٹے گرنا جسم پر بال نظر آنا بالوں اور کپڑوں کا کٹنا آنکھوں کے سامنے دھاگے بال سانپ وغیرہ نظر آنے۔

۔بہت سخت بدبو کا محسوس ہونا منہ سے یا جسم سے پیٹ میں بہت زیادہ گیس کا ہونا۔

۔کاروبار کا اچانک بند ہو جانا۔

۔بعض لوگوں کے چہرے برے نظر آنا ان کے دیکھتے ہی نفرت کے جذبات پیدا ہونا یا کسی ایک شخص کی نا چاہتے ہوئے بھی بے دام غلامی۔

۔رشتوں کا آنا لیکن بلا سبب بات ٹوٹ جانا۔

۔ایام میں بے ربطگی ہونا۔

۔ ایسا محسوس ہونا کہ کسی نے سوئی چبھوئی ہے اس کی تکلیف کا محسوس کرنا یا یوں لگنا جیسے کسی نے سر میں کوئی ٹھنڈی باریک نوکیلی چیز داخل کی ہے۔

تنبیہ ::::::اگر مریض جسمانی طور پر بیمار ہو اور ڈاکٹر اس کی بیمارے کے بارے حتمی رائے نہ دے رہے ہوں ہر ایک کی مختلف رائے ہو ڈاکٹری رپورٹس کلیئر ہوں تو یہ بھی جادو کہ واضح نشانی ہے-%D9%86/”>Source link

مردوں کے لۓحوریں تو عورتوں کے لۓ کیا ؟

اسلام ایک مکمل دین ہے اس قدر مکمل کہ انسانوں کے حقوق سے لے کر جانوروں کے حقوق بھی اس دین نے ہمارے سامنے رکھ دیے ہیں عورت کو جو مقام و مرتبہ اسلام نے دیا ہے وہ کوئی مذہب نہ دے سکا ! اب سوال کی جانب آتے ہیں جنت میں مرودوں کو تو حوریں ملیں گی مگر عورتوں کو کیا؟ اسکا جواب اس قدر مکمل اور خوبصورت کہ پھر کسی سوال کی ضرورت نہ رہے گی مردوں کو جہاں حوریں ملیں گی وہیں عورتوں کے لیے بھی انعامات کا ذکر ہے جنت میں داخل ہونے والی خواتین کو اللہ

کو اللہ تعالی نئے سرے سے پیدا فرمائیں گے اور وہ کنواری حالت میں جنت میں داخل ہوں گی جنتی خواتین اپنے شوہروں کی ہم عمر ہوں گی جنتی خواتین اپنے شوہروں سے ٹوٹ کر پیار کرنے والی ہوں گی قرآن مجید میں ان تمام باتوں کو سورہ واقعہ میں اس طرح بیان کیا ہے إنا أنشأھن إنشاء 0 فجعلنھن ابکارا 0 عربا اترابا 0 لاصحاب الیمین ( 56: 38-35 ) اہل جنت کی بیویوں کو ہم نئے سرے سے پیدا کریں گے اور انہیں باکرہ بنا دیں گے اپنے شوہروں سے محبت کرنے والیاں اور انکی ہم ،یہ سب کچھ داہنے ہاتھ والوں کے لیے ہوگا (سورہ واقعہ) اہل ایمان میں مردوں کے ساتھ کوئی خاص معاملہ نہ ہوگا بلکہ ہر نفس کو اسکے اعمال کے بدولت نعمتیں عطا کی جائیں گی اور ان میں مرد و عورت کی کوئی تخصیص نہ ہوگی جنت کی خوشیوں کی تکمیل خواتین کی رفاقت میں ہوگی قرآن مجید میں فرمان الہی ہے أدخلو ا الجنة أنتم و ازواجکم تحبرون 0 (43 70 ) ترجمہ : داخل ہو جاؤ جنت میں تم اور تمہاری بیویاں تمہیں خوش کر دیا جائے گا ” (سورہ زخرف )  جنت میں داخل ہونے والی خواتین اپنی مرضی اور پسند کے مطابق اپنے دنیاوی شوہروں کی بیویاں بنیں گی (بشرطیکہ وہ شوہر بھی جنتی ہوں) ورنہ اللہ تعالی انہیں کسی دوسرے جنتی سے بیاہ دیں گے جن خواتین کے دنیا میں (فوت ہونے کی صورت میں ) دو یا تین یا اس سے زائد شوہر رہے ہوں ان خواتین کو اپنی مرضی اور پسند کے مطابق کسی ایک کے ساتھ بیوی بن کر رہنے کا اختیار دیا جائے گا جسے وہ خود پسند کرے گی اس کے ساتھ رہے گی

حضرت ام سلمہ رضی اللہ عنھا کہتی ہیں میں نے عرض کیا اے اللہ کے رسول صل اللہ علیہ وسلم ہم میں سے بعض عورتیں (دنیا میں) دو ،تین یا چار شوہروں سے یکے بعد دیگرے نکاح کرتی ہے اور مرنے کے بعد جنت میں داخل ہو جاتی ہے وہ سارے مرد بھی جنت میں چلے جاتے ہیں تو ان میں سے کون اسکا شوہر ہو گا ؟ آپ صل اللہ علیہ وسلم نے فرمایا ” اے ام سلمہ ! وہ عورت ان مردوں میں کسی ایک گا انتخاب کرے گی اور وہ اچھے اخلاق والے مرد کو پسند کرے گی _ اللہ تعالی سے گزارش کرے گی

“اے میرے رب ! یہ مرد دنیا میں میرے ساتھ سب سے زیادہ اخلاق سے پیش آیا لہذا اسے میریے ساتھ بیاہ دیں (طبرانی النھایہ لابن کثیر فی الفتن والملاحم الجز الثانی رقم الصفحہ 387 )  جنت میں حوروں سے افضل مقام نیک صالح عورت کو حاصل ہوگا مرد کو حوریں ملیں گی تو نیک مرد کی نیک بیوی ان حوروں کی سردار ہوگی حضرت ام سلمہ رضی اللہ عنھا سے روایت ہے میں نے عرض کیا ” اے اللہ کے رسول صل اللہ علیہ وسلم ! یہ فرمائیے کہ دنیا کی خاتوں افضل ہے یا جنت کی حور ؟

” آپ صل اللہ علیہ وسلم نے فرمایا ” دنیا کی خاتون کو جنت کی حور پر وہی فضیلت حاصل ہو گی جو ابرے (باہر والا کپڑا) کو استر (اندر والا کپڑا ) پر حاصل ہوتی ہے (طبرانی مجمع الزوائد الجز ء العاشر ،رقم الصفحہ (418-417 ) یہ ان انعامات کو مختصر سے بھی مختصر حصہ ہے جو جنت میں عورتوں کو عطا کیے جائیں گے جنتی عورت بیک وقت ستر جوڑے پہنے گی جو بہت عمدہ اور نفیس ہوں گے جنتی عورتیں حسن وجمال اور حسن سیرت کے اعتبار سے بے مثال ہوں گی

3 عورت کے اندر فطری طور پر حیا کا مادہ مرد کی نسبت زیادہ ہے اور وفاداری و محبت بھی خالص ایک کے لیے رکھتی ہے اور حسن و جمال اور زینت کو پسند کرتی ہے ان تمام باتوں کی مناسبت سے جنت میں یہ عیش کریں گی اور نیک عورتیں حوروں پر افضل ہوں گی سورہ الرحمن میں اللہ رب العزت کا یہ فرمان پھر دلوں کو سحر زدہ کر دیتا ہےفبای آلاء ربکما تکذبان “پس تم اپنے رب کی کونسی کونسی نعمتوں کو جھٹلاؤ گے ”

》وَسَارِعُوٓا۟ إِلَىٰ مَغْفِرَةٍ مِّن رَّبِّكُمْ وَجَنَّةٍ عَرْضُهَا ٱلسَّمَٰوَٰتُ وَٱلْأَرْضُ أُعِدَّتْ لِلْمُتَّقِينَ 《

دوڑ کر چلو اُ س راہ پر جو تمہارے رب کی بخشش اور اُس جنت کی طرف جاتی ہے جس کی وسعت زمین اور آسمانوں جیسی ہے، اور وہ متقیوں کے لئے تیار کی گئی ہے

پاکستانیوں کی اللہ نے سن لی ! ایسا اے سی مارکیٹ میں آگیا کہ ہر کو ئی خریدنے کیلئے تیا ر ہو جائیگا

مارکیٹ میں ایسا اے سی آ گیا ہے جو عام پاکستانی بھی استعمال کر سکے گا اور یہ اے اسی یو پی ایس پر بھی چلایا جا سکتا ہے، قیمت انتہائی کم جسے غریب آدمی بھی خرید سکتا ہے۔ گرمیوں کی آمد آمد ہے، بجلی کی کمی کے باعث پاکستان میں لوڈ شیڈنگ بھی ہوتی ہے، اب صارفین کے لیے یو پی ایس پر چلنے والا پورٹیبل اے سی فرخت کے لیے پیش کر دیا گیا ہے۔ ملک میں گرمیوں کا آغاز ہے بعض علاقوں میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ میں اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے، لیکن ایک آسٹریلین الیکٹرانک کمپنی نے

گرمی اور لوڈشیڈنگ سے ستائے اور لوگوں کے لیے ایک شاندار تحفہ پیش کیا ہے، واضح رہے کہ کلوس کمفرٹ نامی آسٹریلین کمپنی کی طرف سے یو پی ایس پر چلنے والا ایک پورٹیبل اے سی پاکستان میں فروخت کے لیے پیش کر دیا گیا ہے۔ یہ اے سی کل 320 واٹ بجلی استعمال کرتا ہے اس اے سی کا قد قد 4 سے 5 فٹ ہے۔ اس اے سی کی خصوصیت یہ ہے کہ یہ44 سے 45 ڈگری سینٹی گریڈ تک کی گرمی میں بھی زبردست ٹھنڈک پیدا کر سکتا ہے اور اس کے استعمال سے صرف 15 سو روپے ماہانہ اضافہ ہو گا۔

طوائف کا جنازہ

اسلام آباد(قدرت روزنامہ) ﺷﺎﮦ ﻭﻟﯽ ﺍﻟﻠﮧ ﮐﮯ ﺑﯿﭩﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺍﯾﮏ ﺑﯿﭩﮯ ﺷﺎﮦ ﺭﻓﯿﻊ ﺍﻟﺪﯾﻦؒ ﻧﮯ ﻗﺮﺁﻥ ﭘﺎﮎ کا ﺗﺮﺟﻤﮧ ﺍﺭﺩﻭ ﻣﯿﮟ ﮐﯿﺎ ﺍﻭﺭ ﺩﻭﺳﺮﮮ ﺑﯿﭩﮯ ﺷﺎﮦ ﻋﺒﺪﺍﻟﻘﺎﺩﺭؒ ﻧﮯ ﻗﺮﺁﻥﭘﺎﮎ ﮐﺎ ﺑﺎﻣﺤﺎﻭﺭﮦ ﺍﺭﺩﻭ ﺗﺮﺟﻤﮧ ﮐﯿﺎ. ﺗﯿﺴﺮﮮ ﺍﻭﺭ ﺑﮍﮮ ﺑﯿﭩﮯ ﺷﺎﮦﻋﺒﺪﺍﻟﻌﺰﯾﺰؒ ﮨﯿﮟ ﺟﻮ 1159ھ ﻣﯿﮟ ﭘﯿﺪﺍ ﮨﻮﺋﮯ،ﻋﻠﻢ ﻭﻓﻀﻞ ﺍﻭﺭ ﺗﻘﺪﺱ ﻣﯿﮟ ﺑﺎﭖ ﮐﮯ ﮨﻢ ﻣﺮﺗﺒﮧ ﺗﮭﮯ،ﺍﻭﺭ ﺫﮨﺎﻧﺖ ﻭ ﻃﺒﺎﻋﯽ ﻣﯿﮟ ﺟﻮﺍﺏ ﻧﮧ ﺭﮐﮭﺘﮯﺗﮭﮯ.

ﺍﻥ ﮐﯽ ﺣﺎﺿﺮ ﺟﻮﺍﺑﯽ ﺩﻟﯽ ﻣﯿﮟ ﺍﺑﮭﯽ ﺗﮏ ﻧﻘﻞ ﮨﻮﺗﯽ ﭼﻠﯽ ﺁﺋﯽ ﮨﮯ. ﻣﯿﮟ ﺍﻥ ﻣﯿﮟ ﺳﮯ ﭼﻨﺪ ﮐﻮ ﯾﮩﺎﮞ ﭘﯿﺶ کیا جا رہا ہے. ﺍﯾﮏ ﺷﺨﺺ ﻧﮯ ﺍﯾﮏ ﻣﺴﺌﻠﮧ ﺩﺭﯾﺎﻓﺖ ﮐﯿﺎ :ﺣﻀﻮﺭ ﯾﮧ ﭘﯿﺸﮧ ﻭﺭ ﻃﻮﺍﺋﻔﯿﮟ ﻣﺮﯾﮟ ﺗﻮ ﺍﻥ ﮐﯽ ﻧﻤﺎﺯ ﺟﻨﺎﺯﮦ ﮐﯽ ﻧﻤﺎﺯ ﺟﻨﺎﺯﮦ ﭘﮍﮬﻨﯽ ﭼﺎﮨﺌﮯ ﯾﺎ ﻧﮩﯿﮟ؟ ﺷﺎﮦ ﺻﺎﺣﺐ ﻧﮯ ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ : ﺍﻥ ﮐﮯ ﯾﮩﺎﮞ ﺟﺎﻧﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﺍﻭﺭ ﺍﻥ ﺳﮯ ﻧﺎﺟﺎﺋﺰﺗﻌﻠﻖ ﺭﮐﮭﻨﮯ ﻭﺍﻟﮯﻣﺮﺩﻭﮞ ﮐﯽ ﻧﻤﺎﺯ ﺟﻨﺎﺯﮦ ﭘﮍﮬﺘﮯ ﮨﻮ؟ ﺳﺎﺋﻞ ﻧﮯ ﮐﮩﺎ ،ﺍﻥﮐﯽ ﺗﻮ ﭘﮍﮬﺘﮯ ﮨﯿﮟ ! ﺷﺎﮦ ﺻﺎﺣﺐ ﻧﮯ ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ : ﺗﻮ ﺍﻥ ﻃﻮﺍﺋﻔﻮﮞ ﻧﮯ ﺍﻥﺳﮯ ﺑﮍﮪ ﮐﺮ ﮐﻮﻥ ﺳﺎ ﻗﺼﻮﺭ ﮐﯿﺎ ﮐﮧ ﺍﻧﮩﯿﮟ ﻧﻤﺎﺯ ﺟﻨﺎﺯﮦ ﺳﮯ ﻣﺤﺮﻭﻡ ﺭﮐﮭﺎﺟﺎﺋﮯ. ﺩﮨﻠﯽ ﮐﺎ ﺭﯾﺰﯾﮉﻧﭧ ﺷﺎﮦ ﺻﺎﺣﺐ ﺳﮯ ﻣﻠﻨﮯ ﺁﯾﺎ ﺍﻭﺭ ﺑﺎﺗﻮﮞ ﺑﺎﺗﻮﮞ ﻣﯿﮟﮐﮩﻨﮯ ﻟﮕﺎ،ﺟﻨﺎﺏ ﻣﯿﮟ ﻧﮯ ﺍﯾﮏ ﺳﻮﺍﻝ ﮐﺌﯽ ﻋﺎﻟﻤﻮﮞ ﺳﮯ ﮐﯿﺎ،ﮐﻮﺋﯽ ﺗﺴﻠﯽﺑﺨﺶ ﺟﻮﺍﺏ ﻧﮩﯿﮟ ﻣﻠﺘﺎ،ﺁﭖ ﺑﮭﯽ ﻏﻮﺭ ﮐﯿﺠﺌﮯ، ﺳﻮﺍﻝ ﯾﮧ ﮨﮯﮐﮧ ﺍﯾﮏ ﻣﺴﺎﻓﺮ ﺭﺍﺳﺘﮧ ﺑﮭﻮﻝ ﮔﯿﺎ،

ﺍﺱ ﻧﮯ ﺩﯾﮑﮭﺎ ﮐﮧ ﺍﯾﮏ ﺷﺨﺺ ﺳﺎﻣﻨﮯ ﭘﮍﺍ ﺳﻮﺭﮨﺎ ﮨﮯﺍﻭﺭ ﺍﯾﮏ ﺷﺨﺺ ﺍﺱ ﮐﮯ ﺑﺮﺍﺑﺮ ﺑﯿﭩﮭﺎ ﮨﮯ.ﺍﺏ ﻣﺴﺎﻓﺮ ﺟﺎﮔﺘﮯ ﺳﮯﺭﺍﺳﺘﮧ ﻣﻌﻠﻮﻡ ﮐﺮﮮ ﯾﺎ ﺳﻮﺗﮯ ﺳﮯ؟ﺷﺎﮦ ﺻﺎﺣﺐ ﺳﻮﺍﻝ ﮐﯽ ﺗﮧ ﺗﮏ ﭘﮩﻧﭻ ﮔﺌﮯ ،ﺳﻮﺗﮯﺳﮯﻣﺮﺍﺩﺣﻀﺮﺕﻣﺤﻤدﷺ ﺗﮭﮯﺍﻭﺭ ﺟﺎﮔﺘﮯ ﺳﮯ ﻣﺮﺍﺩ ﺣﻀﺮﺕ ﻋﯿﺴﯽعلیہ ﺍﻟﺴﻼﻡ ،ﺷﺎﮦ ﺻﺎﺣﺐ ﻧﮯﻓﻮﺭﺍً ﺟﻮﺍﺏ ﺩﯾﺎ ﻭﮦ ﺟﺎﮔﻨﮯ ﻭﺍﻻ ﺧﻮﺩ ﺍﺱﺍﻧﺘﻈﺎﺭ ﻣﯿﮟ ﺑﯿﭩﮭﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺳﻮﻧﮯ ﻭﺍﻻ ﺍﭨﮭﮯ ﺗﻮ ﺍﺱ ﺳﮯ ﺭﺍﺳﺘﮧ ﻣﻌﻠﻮﻡﮐﺮﮮ، ﻣﺴﺎﻓﺮ ﮐﻮ ﭼﺎﮨﺌﮯ ﮐﮧ ﻭﮦ ﺑﮭﯽ ﺳﻮﻧﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﮐﺎ ﺍﭨﮭﻨﮯ ﮐﺎ ﺍﻧﺘﻈﺎﺭﮐﺮﮮ. ﺍﯾﮏ ﺷﺨﺺ ﻧﮯ ﻋﺮﺽ ﮐﯿﺎ ﻣﺤﻔﻞ ﺭﻗﺺ ﻭ ﺳﺮﻭﺩ ﻣﯿﮟ ﺍﻧﺴﺎﻥﺭﺍﺕ ﺑﮭﺮ ﺟﺎ ﮔﺘﺎ ﺭﮨﺘﺎ ﮨﮯ ،ﻟﯿﮑﻦ ﻋﺒﺎﺩﺕ ﻣﯿﮟ ﺍﺱ ﮐﻮ ﻧﯿﻨﺪ ﺁﻧﮯ ﻟﮕﺘﯽﮨﮯ،ﺍﺱ ﮐﯽ ﮐﯿﺎ ﻭﺟﮧ ﮨﮯ؟ﺷﺎﮦ ﺻﺎحب ﻧﮯ ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ ﺩﻭ ﭘﻠﻨﮓ ﮨﻮﮞ ﺍﯾﮏﭘﻠﻨﮓ ﭘﺮ ﭘﮭﻮﻝ ﺑﭽﮭﺎ ﺩیئے ﺟﺎﺋﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﺩﻭﺳﺮﮮ ﭘﺮ ﮐﺎﻧﭩﮯ ،ﺗﻮ ﻧﯿﻨﺪ ﮐﺲ ﭘﺮﺁﺋﮯ ﮔﯽ ،ﺍﺱ ﻧﮯ ﮐﮩﺎ ﭘﮭﻮﻝ ﻭﺍﻟﮯ ﭘﻠﻨﮓ ﭘﺮ ،ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ ﺑﺲ ﺭﻗﺺ ﻭﺳﺮﻭﺩﮐﯽ ﻣﺤﻔﻞ ﮐﯽ ﻣﺜﻞ ﮐﺎﻧﭩﻮﮞ ﻭﺍﻟﮯ ﭘﻠﻨﮓ ﮐﯽ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﺍﻟﻠﮧ ﮐﮯ ﻋﺒﺎﺩﺕ ﻭﺍﻟﮯﮐﯽ ﻣﺜﺎﻝ ﭘﮭﻮﻝ ﻭﺍﻟﮯ ﭘﻠﻨﮓ ﮐﯽ ﮨﮯ.

ﺍﯾﮏ ﺳﻮﺩﺍ ﮔﺮ ﮐﻮ ﺍﭘﻨﯽ ﺑﯿﻮﯼ ﺳﮯ ﺑﮩﺖ ﻣﺤﺒﺖ ﺗﮭﯽ ﻟﯿﮑﻦ ﺑﯿﻮﯼﮐﮯﺑﺎﭖ ﺳﮯ ﻭﮦ کچھ ﻧﺎ ﺧﻮﺵ ﺗﮭﺎ ،ﻭﮦ ﺳﻮﺩﺍﮔﺮﯼ ﮐﮯ ﻟﯿﮯ ﺳﻔﺮ ﭘﺮ ﺟﺎﻧﮯﻟﮕﺎﺗﻮ ﺑﯿﻮﯼ ﮐﻮ ﺗﺎﮐﯿﺪ ﮐﺮﺩﯼ ﮐﮧ ﺍﮔﺮ ﺑﺎﭖ ﮐﮯ ﮔﮭﺮ ﮔﺌﯽ ﺗﻮ تجھ ﮐﻮﻃﻼﻕ،ﺍﺗﻔﺎﻕ ﮐﯽ ﺑﺎﺕ ﺍﺳﯽ ﺍﺛﻨﺎﺀ ﻣﯿﮟ ﺑﯿﻮﯼ ﮐﮯ ﻭﺍﻟﺪ ﮐﺎ ﺍﻧﺘﻘﺎﻝﮨﻮﮔﯿﺎ،ﺳﻮﺩﺍ ﮔﺮ ﮐﯽ ﺑﯿﻮﯼ ﮐﯿﺎ ﮐﺮﺗﯽ ﺍﺱ ﺳﮯ ﺭﮨﺎ ﻧﮧ ﮔﯿﺎ ﺍﻭﺭ ﺍﻭﺭ ﻭﮦﺑﺎﭖ ﮐﮯ ﮔﮭﺮ ﺟﺎ ﭘﮩﻨﭽﯽ،ﺳﻮﺩﺍ ﮔﺮ ﺁﯾﺎ ﺗﻮ ﭘﺮﯾﺸﺎﻥ ﮨﻮﺍ ﮐﮧ ﺑﯿﻮﯼ ﺧﻮﺍﮦﻣﺨﻮﺍﮦ ﮨﺎتھ ﺳﮯ ﭼﻞ ﺩﯼ.ﺟﺲ ﻋﺎﻟﻢ ﺳﮯ ﺑﮭﯽ ﻓﺘﻮﯼٰ ﻣﻌﻠﻮﻡ ﮐﺮﺗﺎ ﺳﺐﯾﮩﯽ ﮐﮩﺘﮯ ﻃﻼﻕ ﮨﻮﮔﺌﯽ . ﺷﺎﮦ ﺻﺎﺣﺐ ﮐﮯ ﺳﺎﻣﻨﮯ ﺑﮭﯽ ﯾﮧ ﻣﺴﺌﻠﮧ ﺁﯾﺎﺗﻮآﭖ ﻧﮯ ﺑﺮﺟﺴﺘﮧ ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ ﻃﻼﻕ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺋﯽ ﺍﺱ ﻟﯿﮯ ﮐﮧ ﺑﺎﭖ ﮐﮯ ﻣﺮﻧﮯﮐﮯ ﺑﻌﺪ ﻭﮦ ﮔﮭﺮ ﺑﺎﭖ ﮐﺎ ﮐﮩﺎﮞ ﺭﮨﺎ ﻭﮦ ﺗﻮ ﺍﺱ ﮐﺎ ﮨﯽ ﮔﮭﺮ ﮨﻮﮔﯿﺎ ،ﺳﻮﺩﺍﮔﺮﮐﯽ ﺑﯿﻮﯼ ﺍﭘﻨﮯ ﺑﺎﭖ ﮐﮯ ﮔﮭﺮ ﻧﮩﯿﮟ ﮔﺌﯽ ﺑﻠﮑﮧ ﺍﭘﻨﮯ ﮔﮭﺮ ﮔﺌﯽ،ﭘﮭﺮ ﻃﻼﻕﮐﯿﺴﯽ؟ﺍﯾﮏ ﺍﻧﮕﺮﯾﺰ ﻧﮯ ﺷﺎﮦ ﺻﺎﺣﺐ ﺳﮯ ﺳﻮﺍﻝ ﮐﯿﺎ ﮐﮧ ﮨﻤﺎﺭﯼ ﻗﻮﻡ ﮐﮯﺳﯿﻨﮑﭩﺮﻭﮞ ﺁﺩﻣﯽ ﺍﯾﮏ ﺟﮕﮧ ﺟﻤﻊ ﮨﻮﺟﺎﺋﯿﮟ ﺗﻮ ﺍﯾﮏ ﺭﻧﮓ ﺍﻭﺭ ﺍﯾﮏ ﺭﻭﭖﮐﮯ ﻧﻈﺮ ﺁﺋﯿﮟ ﮔﮯ ﻟﯿﮑﻦ ﺁﭖ ﮐﯽ ﻗﻮﻡ ﻣﯿﮟ ﮐﻮﺋﯽ ﮐﺎﻻ ﮐﻮﺋﯽ ﮔﻮﺭﺍ ﮐﻮﺋﯽﺳﺎﺅﻧﻮﻻ ﺍﯾﺴﺎ ﮐﯿﻮﮞ ‘‘ﺷﺎﮦ ﺻﺎﺣﺐ ﻧﮯ ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ ’’: ﮔﺪﮬﮯ ﺳﺐ ﯾﮑﺴﺎﮞ ﮨﻮﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﮔﮭﻮﮌﮮﻣﺨﺘﻠﻒ ﮨﻮﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﮐﻮﺋﯽ ﺳﺒﺰﮦ ﮐﻮﺋﯽ ﻧﻘﺮﮦ،ﮐﻮﺋﯽ ﺳﺮﻣﺎﺋﯽ.

پھنکار

اسلام آباد (قدرت روزنامہ) ایک بزرگ سے کسی سانپ نے بیعت کر لی تھی. انہوں نے اس سے یہ عہد لیا کہ کسی کو ڈسنا نہیں جانوروں نے جو دیکھا کہ یہ کسی کو کچھ کہتا ہی نہیں ہے تو نڈر ہو کر سب نے اس کو مارنااور تنگ کرنا شروع کر دیا.

چند روز کے بعد وہ بزرگ کے پاس آیا تو دیکھا بہت ہی بری حالت میں ہے. پوچھا کیا حال ہے؟ کہا آپ نے کاٹنے سے منع کر دیا تھا جانوروں کو جب یہ خبر ملی تو اب سب مجھے تنگ کرنے لگے.فرمایا!’’میں نے کاٹنے سے ہی تو منع کیا ہے

پھنکارنے سے تو منع نہیں کیا ہے، اب سے جوجانور پاس آئے فوراً پھنکار دیا کروکہ وہ بھاگ جائے.اس روز سے غریب کو چین ملا اسی طرح بزرگوں کو بھی چاہئے کہ کبھی کبھی پھنکار دیا کریں تاکہ لوگ بلاوجہ زیادہ تنگ نہ کریں.

اسے کہتے ہیں گھر کا بھیدی لنکا ڈھائے ن لیگ کو الیکشن سے قبل کون سے اراکین اسمبلی خیر آباد کہہ دیں گے ؟ چند یوم قبل ن لیگ سے پی ٹی آئی میں شامل ہونے والے رضا حیات ہراج نے سارا کچا چٹھا کھول کر رکھ دیا

اسلام آباد (ویب ڈیسک آن لائن) جنرل الیکشن سے قبل کئی نامور سیاستدان پارٹیاں بدلنے کے حوالے سے شہرت رکھتے ہیں جنہوں نے اپنا رخ ہوا کے ساتھ موڑ لینا ہو تا ہے اور پاکستان مسلم لیگ ن کی حکومت کے 5 سال مکمل ہو نے کے بعد لیگی قائدین کے حالیہ صورتحال کے پیش نظر

کئی رہنماء پارٹی کو چھوڑ کے جانے والے ہیں اور اب الیکشن سے پہلے مسلم لیگ ن کے لیے سب سے بری خبرآگئی۔مسلم لیگ ن کے سابق رہنما رضا حیات ہراج کا کہنا تھا کہ بہاولنگر ،بہالپور اور رحیم یار خان کے مسلم لیگ ن سے تعلق رکھنے والے اراکین قومی اسمبلی جلد پارٹی چھوڑ دیں گے۔تفصیلات کے مطابق الیکشن کا سال ہے ہر جانب سیاسی جوڑ توڑ عروج پر ہے۔سیاسی لوگ اپنے مفادات اور نظریات کو جواز بنا کر وفاداریاں تبدیل کر رہے ہیں۔ایسے میں الیکشن سے پہلے مسلم لیگ ن کے لیے سب سے بری خبرآگئی۔مسلم لیگ ن سے باغی ہو کرتحریک انصاف کے سابق رہنما و رکن قومی اسمبلی رضا حیات ہراج نے انکشاف کیا ہے کہ جلد ہی مسلم لیگ اپنے بہت سے اراکین اسمبلی سے ہاتھ دھونے والی ہے۔وہ نجی ٹی میں حالیہ سیاسی صورتحال پر تبصرہ کر رہے تھے۔مسلم لیگ ن کے سابق رہنما رضا حیات ہراج کا کہنا تھا کہ بہاولنگر ،بہالپور ، رحیم یار خان اور دیگر اضلاع کے مسلم لیگ ن سے تعلق رکھنے والے اراکین قومی اسمبلی جلد پارٹی چھوڑ دیں گے۔یاد رہے کہ رضا حیات ہراج بھی ختم نبوت کے معاملے پر مسلم لیگ ن کو خیر باد کہہ چکے ہیں۔واضح رہے کہ مسلم لیگ ن کے کئی ممبران اسمبلی بھی حکومتی جماعت کو خیر آباد کہہ کر تحریک انصاف میں شامل ہو چکے ہیں۔ ایک میڈیا رپورٹ کے مطابق ذیل اراکین کی پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت متوقع ہے۔

ان ارکان کے نام اور تصاویر نیچے ملاحظہ فرمائیں۔

Image result for khusro bakhtiar

مخدوم خسرو بختیار رکن قومی اسمبلی ن لیگ رحیم یار خاں

Image result for pir aslam bodla mna

پیر محمد اسلم بودلہ رکن قومی اسمبلی ن لیگ میاں چنوں

Related image

طاہر بشیر چیمہ رکن قومی اسمبلی ن لیگ بہاولنگر

Image result for ghulam bibi mna

غلام بی بی بھروانہ رکن قومی اسمبلی ن لیگ جھنگ

Image result for malik aziz khan mna

ملک عزیز خاں رکن قومی اسمبلی ن لیگ خوشاب

Image result for najaf sial mna

نجف عباس سیال رکن قومی اسمبلی ن لیگ احمد پور سیال جھنگ

Image result for asad ur rehman mna

چوہدری اسدالرحمن  رکن قومی اسمبلی ن لیگ کمالیہ

Related image

شیخ محمد اکرم رکن قومی اسمبلی ن لیگ جھنگ

Image result for rana qasim noon mna

رانا قاسم نون رکن قومی اسمبلی ن لیگ جلالپور پیروالہ ملتان

Image result for rajab baloch mna

رجب علی بلوچ رکن قومی اسمبلی ن لیگ مامونکانجن

Image result for armghan subhani mna

امغان سبحانی  رکن قومی اسمبلی ن لیگ سیالکوٹ

Image result for rao ajmal mna

راؤ محمد اجمل رکن قومی اسمبلی ن لیگ دیپالپور اوکاڑہ

Image result for riaz pirzada mna

ریاض پیر زادہ رکن قومی اسمبلی ن لیگ بہاولپور

اس کے علاوہ رپورٹ میں یہ بھی لکھا گیا ہے کہ 30کے قریب ممبران جن کا تعلق جنوبی ،وسطی اور شمالی پنجاب سے ہے ۔تحریک انصاف کے ساتھ رابطے میں ہیں۔جنوبی پنجاب کے وہ دس ممبران صوبائی اسمبلی شامل ہیں جنھوں نے سینیٹ الیکشن میں تحریک انصاف کو سپورٹ کیا۔رپورٹ میں یہ بھی لکھا گیا ہے کہ پنجاب میں ن لیگ کا ایک بڑا باغی گروپ موجود ہے۔اعلی سویلین اٹیلی جنس بھی مسلم لیگ ن کی قیادت کو اس بات سے آگاہ کر چکی ہیں کہ پنجاب سے تعلق رکھنے والے 20ممبران قومی و صوبائی اسمبلی آئیندہ الیکشن میں اپنا سیاسی پلیٹ فارم تبدیل کر سکتے ہیں۔چند یوم قبل ن لیگ کے ڈاکٹر نثار احمد جٹ فیصل آباد سے اور رضا حیات ہراج خانیوال سے پاکستان تحریک انصاف میں بھی شامل ہو چکے ہیں